اتوار, دسمبر 23, 2012

ہماری سستیاں یا بدمغزیاں

ان  دنوں کچھ عجیب سے بد مغزی و سستی چھائی ہوئی ہے،   باوجود کوشش کے کچھ لکھا ہی نہیں جارہا،    حالانکہ ،  بہت سے موضوعات ایسے ہیں جن  پر لکھنا چاہ رہا تھا،  مثلاُ    ، فرعون  کے بارے  میں مذید کچھ ، پھر پاکستانی  بتوں کے بارے،  پھر مولبی قادری کے بارے،     بہن کے عاشق کے ہاتھوں ہونے والی شہید کے بارے،     مگر جب بھی لکھنے بیٹھتا ہوں تو  لکھ کر چھوڑ دیتا ہوں،   لکھ کر سیو کرنے کی بجائے پھر لکھنے کو کہہ کر ترک کردینا۔

وہ بھی دن ہوتے ہیں جب ایک دن میں دو دو پوسٹیں لکھ ماریں،  یا کسی دوست نے کہہ دیا تو ہم نے ادھ گھنٹے میں لکھ مارا،  مگر اب کی بار تو بس چپ ہی لگ گئی۔


میرے خیال میں تو یہ سب بدمغزی ہے، یہ پھر اس کو سستی کہہ لو،  کچھ اسے لاپرواہی   کہہ لو،  یا کچھ اور کہہ ، مگر سمجھ یہ نہیں آرہا کہ یہ سب کیوں ہورہا ہے، اب تو مایا کے کلینڈر کو بھی موردالزام نہیں ٹھہرایا جاسکتا۔   تو پھر کیا ہوسکتا ہے۔ 

9 تبصرے:

  • علی says:
    12/23/2012 09:15:00 PM

    اسکو کہتے ہیں عیاشی مارنا :)

  • افتخار راجہ says:
    12/23/2012 11:50:00 PM

    حد ہوگئی، تجھے اٹکیلیاں سوجھ رہیں اور ہم اداس پڑے ہیں،
    عیاشی یہ کیا ہوئی؟؟

  • کوثر بیگ says:
    12/24/2012 04:55:00 AM

    اتنے موضوعات کو ایک ساتھ سوچے تو کچھ نہ لکھ سکےگے ایک کے بعد ایک کو لے کر لکھنا شروع کردے اس کو مٹانے کی جگہ کچھ کم زیادہ کرئے یا پھر کبھی کے لئے اٹھا رکھ دیے ۔لکھنے کے دوران ایک گرم گرم چائے کا کپ بھی بڑا کام دیتا ہے ۔ یا کبھی کوئی کتاب یا فلم دیکھنا بھی موڈ کو ٹھیک کردیتا ہے یا ایک لمبی نیند بھی ۔۔دیکھے کیا چیز آپ کو مناسب لگھے عمل کرکے دیکھیے ۔اتنے اچھے اچھے مشورہ فری میں دے دیے ہیں اب چلیں جلدی سے ایک زوردارتحریر آپ کے بلاگ میں چاہیے ہی چاہیے۔۔ہاہاہاہا

  • محمد ریاض شاہد says:
    12/24/2012 03:18:00 PM

    اس طرح کی کاہلی کے دور سب پر آتے رہتے ہیں ۔ فکر مکوہ

  • فضل دین says:
    12/24/2012 05:58:00 PM

    ایسے دنوں کیلئے کچھ پوسٹیں بچا کے رکھنی چاہیئں :)

  • افتخار راجہ says:
    12/24/2012 08:42:00 PM

    آپ کا حوصلہ کچھ لکھنے پر مائل کررہا، بس دیکھتے جائیے

  • راجہ جی !آئیں میدان میں ۔۔ یہ کیا ؟

  • درویش خُراسانی says:
    12/26/2012 05:03:00 AM

    یارا یہ تو ہماری ہی ھالت ہے۔روز اتنے تماشے دیکھنے کو ملتے ہیں ،لیکن جب لکھنے بیٹھ جاؤں تو پھر ذہن خالی ہو جاتا ہے۔

    تین پوسٹیں نمکمل پڑی ہیں ،اس امید پر کہ انکو پورا کرنا ہے ،لیکن شائد اس خیال کو تحریری شکل دین تک وہ موضوع ہی ذہن سے مٹ جائے۔

  • عبدالرؤف says:
    1/05/2013 11:54:00 AM

    ڈاکڑ صاحب کہیں یہ کسی بیماری کی نشانیاں تو نہیں ہے مثلاً : http://www.fmnetnews.com/fibro-basics/symptoms

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ اس موضوع پر کوئی رائے رکھتے ہیں، حق میں یا محالفت میں تو ضرور لکھیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


جملہ حقوق بنام ڈاکٹر افتخار راجہ. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.

اس بلاگ میں تلاش