سوموار, جنوری 02, 2012

سیاہ ست دانیاں

کچھ سیاہ سی بیانات پر ہماری عقل سلیم کے مطابق عوامی تبصرے ایک آم آدمی کی حیثیت سے میں تو یہی کہہ سکتا ہوں کہ جناب ہن رہن دیو تے عوام نوں وی کج کہن دیو


   پاکستان کے وفاقی وزیر پٹرولیم ڈاکٹر عاصم نے کہاگیس بحران کو سیاسی رنگ دیا جارہاہے 
تو کیا سے مذہبی رنگ دیا جاہئے فیر آپ کے خیال شریف میں

پاکستانی راستےسپلائی کی بحالی نیٹوپرمید   ، افغانستان میں موجود نیٹو فوج
جی بلکل جب تک رزرداری موجود ہے تب تک آپ کو امید سے ہونے سےکون روک سکتا ہے۔

عدالتی سزاپرحقانی کوصدارتی معافی دینےکاامکان,  ، ایکسپریس نیوز
صدر صاحب کو چاہئے کہ وہ اس سزا یافتہ قوم کو بھی صدارت سے معافی دینے کا سوچیں،

پتہ نہیں صدر سے کون ملاقات کرانا چاہتا ہے        ، نواز شریف
میاں صاحب کیا واقعی آپ اتنے سادے ہیں، بال لگوا کر تو بندے کو اس طرح کی باتین نہیں کرنی چاہئیں

میموگیٹ تحقیقاتی کمیشن کا اجلاس، حسین حقانی پیش نہ ہوئے،      جنگ نیوز
کیوں اس نے کوئی گھاس کھایا ہوا ہے کہ پیش ہوکر چھتر کھائے، اپنے کئے ہوئے سب کو پتا ہوتے ہیں

       ڈاکٹر فاروق ستارالطاف حسین نے نئے صوبے بنانے کا وعدہ پورا کردیا
تو فیر الطاف حسین جان کی امان، باقی کراچی کے امن ، خوشحالی دینے اور غربت دور کرنے کے وعدے تھے انکا کیا ہوا، وہ   بھی پورے کر کے جلدی سے لوٹ آؤ وطن کو


  عمران خان کا کوئی بیان سامنے نہیں آیا آج    نہ تنقید کی کیسی پر  نہ ہی نعرے
اللہ خیر کرے، نصیب دشمناں کہیں خانصاب کی طبیعت تو خراب نہیں؟ یا چپ کا روزہ رکھ لیا ہے


یہ سب کچھ جو میرے دماغ میں آیا، اگر آپ اس سے مختلف سوچتے ہیں تو لکھ دیں تبصرہ میں 

0 تبصرے:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ اس موضوع پر کوئی رائے رکھتے ہیں، حق میں یا محالفت میں تو ضرور لکھیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


جملہ حقوق بنام ڈاکٹر افتخار راجہ. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.

اس بلاگ میں تلاش