ہفتہ, ستمبر 04, 2010

چرچ میں افطار

آج ہمارے کچھ عیسائی دوستوں نے جو بہت مذہبی ہیں اور ہمارے مذہب کے ساتھ لگاوٗ کی قدر کرتے ہوئے ہماری افطار پارٹی کا اہتمام کیے ہوئے ہیں۔ یہ پروگرا م ایک چرچ کے ہال میں ہوگا۔ جہاں پر دونو ں مذاہب کے بارے میں بات ہوگی، افطار ہوگی اور نماز کے لئے جگہ دی جائے گی۔ کیا ہم یہ سب اپنے ہم مذہبوں کے ساتھ بھی نہیں کرسکتے۔ بقول مملکت خداداد میں حضرت علی رضی اللہ کے جلوس پر دھماکہ، مسجد و مزار میں فائرنگ۔ ہم کس طرف جارہے ہیں اور کون سا راستہ اپنا چکے ہیں، ہمارا دین جو رواداری کا سبق دیتا ہے کیسے اسے بھلا بیٹھے ہیں؟؟؟؟؟

8 تبصرے:

  • Rizwan says:
    9/06/2010 10:28:00 AM

    راجہ صاحب
    ہم بھی بہت تیزی سے ترقی کر رہے ہیں لیکن ترقی معکوس

  • کاشف نصیر says:
    9/06/2010 04:29:00 PM

    چلئے جی کلیسا تک تو آپ پہنچ گئے کسی دن مندر میں بھی افتطار کرلیجئے اور صنم خانے میں بھی نماز ادا کر لیجئے گا.

  • کاشف نصیر says:
    9/06/2010 04:33:00 PM

    چلئے جی کلیسا تک تو آپ پہنچ گئے کسی دن مندر میں بھی افتطار کرلیجئے اور صنم خانے میں بھی نماز ادا کر لیجئے گا.

  • عطاء رفیع says:
    9/06/2010 07:59:00 PM

    ہم میں کچھ ایسے گھس پیٹئے موجود ہیں جو ہمیں ایک ہوتا نہیں دیکھ سکتے کہ اس سے ان کی "واحد آمدنی" بند ہوجائے گی۔
    جب کہیں کوئی خبر اتحاد کی ملتی ہے یہ لوگ بیچ میں آکر وہی لڑائی چھیڑ دیتے ہیں جنہیں لڑے ہوئے ہماری سو پیڑیاں فنا ہوگئیں۔ اللہ بچائے۔

  • عطاء رفیع says:
    9/06/2010 08:02:00 PM

    جب تک ہمارے بیچ ایسے گھس پیٹئے ہوں جن کی واحد آمدنی ان فسادات کو برپا کرنے میں ہو تو ہم ساتھ کبھی نہیں بیٹھ پائیں گے۔

  • Abdullah says:
    9/07/2010 08:09:00 PM

    اللہ پاک مسلمانوں کو پہلے انسان بننے کی توفیق عطا فرمائیں آمین یا رب العالمین

  • کاشف نصیر says:
    9/07/2010 11:48:00 PM

    عطاء جی جس طرح سے ساتھ بیٹھنے اور ایک ہونے کے لئے مضطرب کہیں ایسا نہ ہو کہ وقعی آپکے ساتھ بیٹھا کر ایک کردئے جائیں.

    ویسے کیونہ نہ پہلے ہم مسلمان اور پاکستانی ملکر ایک ساتھ بیٹھ جائیں اور ایک ہوجائیں پھر ہم بات کریں عالمگیر بھائی چارے کی

  • کاشف نصیر says:
    9/07/2010 11:49:00 PM

    عطاء جی جس طرح سے ساتھ بیٹھنے اور ایک ہونے کے لئے مضطرب کہیں ایسا نہ ہو کہ وقعی آپکے ساتھ بیٹھا کر ایک کردئے جائیں.

    ویسے کیونہ نہ پہلے ہم مسلمان اور پاکستانی ملکر ایک ساتھ بیٹھ جائیں اور ایک ہوجائیں پھر ہم بات کریں عالمگیر بھائی چارے کی

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

اگر آپ اس موضوع پر کوئی رائے رکھتے ہیں، حق میں یا محالفت میں تو ضرور لکھیں۔

اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔


جملہ حقوق بنام ڈاکٹر افتخار راجہ. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.

اس بلاگ میں تلاش